انّا نہیں مانی

آج پھر کھانا اسے پسند نہیں آیا. اسی طرح چیخا, برتن توڑے, کھانا بالکونی سے نیچے پھینکا اور بازار سے کھانا کھانے کے لیے نیچے اتر کر چلا گیا. مگر نیچے جاتے ہی سسکیوں کے ساتھ روتا ہوا واپس آ کر بیڈ پر گر گیا
میں نے بالکونی سے نیچے جھانک کر دیکھا تو ایک شخص وہی کھانا زمین سے اٹھا اٹھا کر کھا رہا تھا اور ہر لقمے پر خدا کا شکر ادا کر رہا تھا.
جب ذرا جی ہلکا ہوا تو میں نے پوچھا ‘کیا ہوا؟’ تو بولا کہ اُس شخص کو زمین سے کھانا اٹھا کر شُکر کے ساتھ کھاتے دیکھا تو جی چاہا کہ اس کے ساتھ وہیں بیٹھ کر اسی طرح کھاؤں پر اسے دیکھ کر بھی انّا نہیں مانی.

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
W Iqbal Majidانّا نہیں مانی