دو ٹوٹے

آج صبح جب میں اپنے دفتر گیا تو میرے دفتر کے باہر میری فیکٹری کا ایک ورکر کھڑا تھا جس نے کل چھٹی کی تھی۔ دعا سلام کے بعد میں نے اُسے پوچھا کہ کل خیریت تھی تم کام پر نہیں آئے تو کہنے لگا سر میں تو آج بھی چھُٹی لینے آیا ہوں میرے ماموں کا بیٹا فوت ہو گیا ہے۔ میں نے فوت ہونے والے کے لیے دعا کی اور پوچھا کیا ہوا اُس کو؟ تو کہنے لگا سَر وہ ریل گاڑی کے نیچے آگیا تھا۔ میں نے حیران ہو کر پوچھا کیسے! تو کہنے لگا سَر وہ اپنے کام سے آ رہا تھا، بس سے اُترا ریل گاڑی کی لائنیں کراس کر کے اپنے گھر کی طرف جا رہا تھا کہ ریل گاڑی کے نیچے آ گیا۔ میں نے کہا اُسے پتا نہیں چلا تو کہنے لگا سَر اُس نے ہینڈ فری جو لگائی ہوئی تھی۔ سَر دو ٹوٹے ہو گئے تھے اُس کے۔۔۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
W Iqbal Majidدو ٹوٹے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *