معاف کون کرے گا

ایک دن میں نے اپنے ڈرائیور کو فون کیا کہ وہ مجھے دفتر سے پِِک کر لے اور میں دفتر سے نیچے اُتر کر باہر آ گیا. دیکھا تو وہاں ایک کار اور ایک موٹر سائیکل کا ایکسیڈنٹ ہوا تھا۔ کار ایک نوجوان لڑکا چلا رہا تھا ۔ اُس کے ساتھ اس کی ماں بیٹھی ہوئی تھی۔ موٹر سائیکل والا ایک عام سے گھر کا واجبی سا لڑکا تھا۔ کار والا اُس پر چِلا رہا تھا۔ شائد اُس کی غلطی کی وجہ سے ہی اُس کی گاڑی میں موٹر سائیکل لگی ہو گی. اُس کی ماں اُسے کہہ رہی تھی کہ بیٹا معاف کر دو، اُس کو معاف کر دو اور وہ کہہ رہا تھا۔ امی ہم ہی رہ گئے ہیں اِن لوگوں کو معاف کرنے کے لئے. یہ ہمیں معاف کیوں نہیں کرتے۔ خیر! اُس کی ماں نے موٹر سائیکل والے لڑکے کو چھوڑ دیا, بات ختم ہوئی اور یہ دونوں ماں بیٹا سامنے دکان میں چلے گئے۔ میں گاڑی کے انتظار میں وہیں کھڑا تھا ۔ دو تین منٹ کے بعد یہ دونوں ماں بیٹا دکان سے واپس آئے تو میں نے معزرت کر کے اُس لڑکے سے کہا بیٹا میں آپ سے کچھ بات کرنا چاہتا ہوں. وہ دونوں ہی میرے قریب آ گئے. میں نے کہا کہ ابھی آپ کا ایکسیڈنٹ ہوا تھا تو آپ کی امی آپ سے کہہ رہی تھیں کہ بیٹا اُسے معاف کر دو اور آپ کہہ رہے تھے کہ ہم کیوں معاف کریں یہ ہمیں کیوں نہ معاف کریں. وہ لڑکا بیچ میں بولا کہ جی ہر دفعہ ہمیں ہی معاف کرنا پڑتا ہے اور نقصان بھی ہمارا ہی ہوتا ہے تو میں نے کہا بیٹا میں آپ کو یہی بتانا چاہتا ہوں کہ آپ انہیں کیوں معاف کریں اور وہ آپ کو کیوں معاف نہ کریں تو بولا جی! میں نے کہا آپ اپنے آپ کا موازنہ اُس لڑکے سے کریں اور سوچیں اللہ تعالیٰ کی ذیادہ رحمتیں کِس پر ہیں؟ اُس نے اچھے ماں باپ کس دئیے ہیں. اعلیٰ تعلیم اور تربیت کس کا نصیب ہے۔ خوشحالی کس کو زیادہ دی ہے. اور بھی بہت سی چیزیں آپ خود سوچ لیں, آپ کو یا اُس کو. اگر دیکھا جائے تو اُس لڑکے کے پاس تمہارے مقابلے میں کچھ بھی نہیں۔ سارا کچھ تو اللہ تعالیٰ نے تمہیں دے دیا تو مجھے بتائیں کہ دے گا کون؟ جس کے پاس زیادہ ہوگا یا جِس کے پاس کم ہو گا؟ سو جب بھی آپ کا آپ سے کم والے ساتھ جھگڑا ہو گا آپ کو ہی چھوڑنا پڑے گا۔ آپ کو ہی معاف کرنا پڑے گا اور اصل میں احسن بھی یہی ہے. تو اس کی ماں بولی دیکھو بیٹا یہی بات میں تمہیں سمجھانے کی کوشش کر رہی تھی.اب لڑکا بھی بات مان رہا تھا کہ یہ بات ٹھیک ہے ہمیں ہی معاف کرنا پڑے گا 

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
W Iqbal Majidمعاف کون کرے گا